سابق امریکی صدر جارج بش نے اداکارہ کو جنسی ہراساں کرنے پر معافی مانگ لی


بش سینئر 1989 سے لے کر1992 تک پانچ سال کے لیے امریکا کے صدر رہے فوٹو:انٹرنیٹ

بش سینئر 1989 سے لے کر1992 تک پانچ سال کے لیے امریکا کے صدر رہے فوٹو:انٹرنیٹ

 واشنگٹن: سابق امریکی صدر جارج بش سینئر نے جنسی ہراساں کرنے پر ہالی ووڈ اداکارہ سے معافی مانگ لی۔

امریکی میڈیا کے مطابق معروف امریکی اداکارہ ہیدرلینڈ کی جانب سے سابق امریکی صدر پر لگائے گئے جنسی ہراساں کرنے کے الزام پر پشیمانی کا اظہار کرتے ہوئے معذرت کرلی ہے۔ 34 سالہ اداکارہ نے الزام عائد کیا تھا کہ جارج بش سینئر نے 2014 میں ایک تقریب کے دوران غلط انداز سے میری کمر کو چھونے کی کوشش کی اور اپنی طرف کھینچا، اس دوران انہوں نے بے ہودہ لطیفہ بھی سنایا۔

اداکارہ نے کہا کہ یہ سب اس وقت ہوا جب ان کی اہلیہ باربرا بھی ساتھ تھیں۔ صورتحال کی نزاکت کو بھانپتے ہوئے بش سنیئر کی اہلیہ نے اپنی نظریں جھکا لیں اور مجھے دوبارہ ان کے پاس کھڑے ہوکر تصویر لینے سے منع کردیا۔

یہ خبر بھی پڑھیں: مودی کےمنہ پر خاتون نے چوڑیاں دے ماریں؛ ویڈیو وائرل

ہیدرلینڈ نےسوشل میڈیا پر خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے حوالے سے #MEETOOکا استعمال کرتے ہوئے انسٹاگرام پر پوسٹ شیئر کی تھی جو جارج بش کی معذرت کے بعد ہٹادی گئی۔

ترجمان بش سینئر نے معذرتی بیان میں لکھا کہ سابق صدر معافی چاہتے ہیں، وہ قطعی طور پر کسی بھی حالت میں جنسی ہراساں کرنے جیسے گھناؤنے فعل کے ارتکاب کا سوچ بھی نہیں سکتے۔

واضح رہے کہ بش سینئر 1989 سے لے کر1992 تک پانچ سال کے لیے امریکا کے صدر رہے اور وہ سابق امریکی صدر جارج ڈبیلو بش کے والد ہیں۔



Source link