کروڑوں فیس بُک اکاؤنٹس کا ڈیٹا چوری ہو چکا ہے؟


فیس بکFacebook نے ایک  بین الاقوامی سیکیورٹی رپورٹ Reportمیں اپنا جواب ریکارڈ کرواتے وقت اعتراف کرلیاہے کہ اس کے 60کروڑوں  سے زائد اکاؤنٹس FB Accounts کےپاس ورڈ سادہ ٹیکسٹ کی صورت میں محفوظ تھے جنہیں اب دور جدید کی  صورتحالCondition کو مد نظر رکھتے ہوئے انہیں  اب خفیہ کردیا گیا ہے۔
سرور میں خرابی، سیکیورٹی میں  انتہائی  زیادہ خامیاں، جھوٹی خبروں کو شایہ کرنا اور اپنے  صارفین Customerکا ڈیٹا  دنیا بھر میں موجوددیگر کمپنیوں کو فروختSale کر دینے کے بعد فیس بک کے متعلق ایک اور  نیا انکشاف منظر عام پر آچکا ہے کہ فیس بُک کے تقریبا  اور  کم سے کم 20 سے 60 کروڑ صارفین کے پاس ورڈPassword محفوظ نہیں رہے۔

فیس بک پر  ایسے بہت سارے اکاؤنٹس  اور انکے پاسورڈ صرف سادہ ٹیکسٹText کی صورت میں محفوظ ہیں یعنی کے صارف جن الفاظ میں پاس ورڈ فیس بُک پر سیف کرتا ہے وہ پاسورڈ فوراً  ایک خفیہ کوڈSecret Code میں تبدیل ہو جانا چاہیئے جسے صرف کمپیوٹر ہی ریڈ کر سکتا ہے لیکن ہو یہ رہا ہے کہ پاسورڈ انہی الفاظ میں سیف Safeہو رہا ہے جن میں انہیں سیف کیا گیا ہےاور کم ازکم دنیا بھر میں پھیلے فیس بک کے لاکھوں ملازمینFb Employees سے یہ  بات پوشیدہ نہیں اور انہیں بہت آسانی سے سرچSearch بھی کرایا اور کیا  جاسکتا ہے۔
 جن صارفین کے پاس ورڈ محفوظ نہیں  انکا تعلقRelation  فیس بک لائٹ، انسٹاگرام اور فیس بک سے ہے۔ حال ہی میں انٹرنیٹ سیکیورٹی کے ماہر برائن کریبس Brain Cripsنے کہا ہے کہ فیس بک پلیٹ  پر ایسے پاس ورڈز کی تعداد 80 کروڑ ہوسکتی ہے جو سادہ ٹیکسٹ کی صورت میں عیاں ہیں اور فیس بُک کے ملازمینEmployees اپنی مرضی سے انہیں سرچ بھی کرسکتےہیں۔
برائن اپنی رپورٹ Reportمیں مزید لکھتے ہیں کہ بعض پاس ورڈز 2011 سے بھی پرانے ہیں ۔ تاہم اس سیکیورٹی  رپورٹ کے آنے کے  فوراًبعد ہی اس سال جنوری میں فیس بک نے باقاعدہ Regularطور پر اس خامی کا اعتراف  کیا اور اپنی  صفائی پیش کی کہ یہ مسئلہ  Problemمکمل حل کردیا گیا ہے اور اب تک اس معلومات کو بھی منفی مقصد کے لیے استعمال نہیں کیا گیا ہے اور صارفین Customerکو  بھی اس  مسلے سے آگاہ کر دیا ہے اور مزید کرتے جا رہے ہیں ۔
فیس بک نے  اپنی اس سیکیورٹی رپورٹ میں  اعتراف کرتے ہوئے کہا ہےکہ ’فیس بک لائٹ اکاؤنٹس FB Id'sکی تعداد 50کروڑ، فیس بک یوزرز Usersکی تعداد چند کروڑ  ہےاور انسٹاگرام پاس ورڈز کی تعداد کئی ہزار ہے۔
گزشتہ دو سال  سے فیس بک کا یہ خفیہ معلومات Informationکی حفاظت سے متعلق اسکینڈل اور خبروں کے بعد یہ ایک اور ایک انتہائی خطرناکDangerous معاملہ بن چکا  ہے جس کا اعتراف فیس بک نے خود کر دیا ہے۔  ماہر سوشل سیکیورٹی برائن کریبس  کے مطابق فیس بکFB نے اس معاملے کو سنجیدگی لیا ہی نہیں کیونکہ کئی اکاؤنٹ 5 سے 7سال پرانے  ہیں۔
 اور یہ بات واضح رہے کہ خود گوگل Googleبھی پاس ورڈ اسٹیرک اور دیگر انداز سے چھپاکر خفیہSecret رکھتا ہے  یہاں تک کہ خود ملازمین بھی اس سے ناواقف ہوتے ہیں۔ لیکن فیس بک کے ڈیٹا بیسDatabase میں سادہ ٹیکسٹ کی صورت میں پاس ورڈ  تو انتہائی خطرناک  مسلہProblem ہے اور ان سے تو ادارے کے ملازمین آسانی سے رسائی حاصل کرسکتے ہیں۔
Loading...
کروڑوں فیس بُک اکاؤنٹس کا ڈیٹا چوری ہو چکا ہے؟  کروڑوں فیس بُک اکاؤنٹس کا ڈیٹا چوری ہو چکا ہے؟ Reviewed by Mirza Ehtsham on March 25, 2019 Rating: 5

No comments:

Facebook

Powered by Blogger.