آسمان نیلا کیوں ہے؟



یہ سمجھنے کیلئے پہلے ہمیں سورج کی روشنی کے بارے میں جانناTo know ہو گا اور پھریہ بھی جاننا ہو گا کہ سورج کی روشنی ہمارے کرہ ہوائیCroatia کو تشکیل دینے والے گیسی مالیکیولوں کے ساتھ کیسے عمل کرتی ہے۔ سورج کی روشنی جوانسانی آنکھ کو سفید محسوسFeel ہوتی ہے دراصل دھنک کے سارے رنگوں کا مجموعہ ہے۔ مختلف وجوہاتReasons کی بنا پر کہا جا سکتا ہے کہ سورج کی روشنی دراصل برقی مقناطیسی لہروںWaves پر مشتمل ہے جو ہوا کے مالیکیولوں میں موجود چارج رکھنے والے ذرات یعنی الیکٹرون اورپروٹون کے چارج برقی مقناطیسیElectromagnetic ریڈی ایشن پیدا کرتے ہیں۔ اِس کی فر یکونسی Frequencyوہی ہوتی ہے جو سورج سے نکلنے والی روشنی کی تھی لیکن یہ تمام اطراف میں پھیل جاتی ہے۔ سورج کی روشنی کایہ راستے تبدیلChange کرنا جس کی وجہ ہوا کے مالیکیول ہوں، انتشار (Scattering) کہلاتا ہے۔
 
دیکھی جا سکنے والی روشنی کے طیف میں نیلا جُز یا نیلی روشنی کا طول موج کم اور فریکونسیFrequency زیادہ ہوتی ہے جبکہ سُرخ روشنیRed Light اس کے بر عکس ہوتی ہے ۔ لہٰذا جب سورج کی روشنی جس میں تمام رنگAll Colours موجود ہوتے ہیں ہوا میں سے گزرتی ہے تو اس کے طیف کے نیلے حصے چارج رکھنے والے ذراتParticles کی سرخ روشنی کے مقابلے میں تیز تر افزائشEnhance کا باعث بنتے ہیں۔ افزائش یا کمی بیشی یا "Oscillation" جس قدر تیزی سے اور زیادہ قوی ہو گی منتشرDispersed روشنی اُتنی ہی زیادہ پیدا ہو گی۔ لہٰذا نیلی روشنی سُرخ روشنی کے مقابلے میں زیادہ تیزی سے قوت سے منتشرDispersed ہو گی۔ چونکہ ہوا کے مالیکیولوں کے ذرات قابلِ بصارت روشنی کے طیف سے بہت چھوٹے ہوتے ہیں لہٰذا اس کا فرق بہت واضح ہوتا ہے۔ چارج رکھنے والے ذرات کا اسراع فریکونسیFrequency کے دُہرے مربع یا چوتھی قوت کے متناسب ہے۔ اِس کے نتیجے میں نیلی روشنی سُرخ روشنی کے مقابلے میں تمام اطراف میں دسگنا زیادہ انتشار اور تیزیFast سے پہنچے گی۔ یہی وجہ ہے کہ جب ہم سورج سے دور آسمانsky پر کسی مقام پر نظر دوڑاتے ہیں تے جو مقام ہمارے نظر کی لکیر پر واقع ہوتا ہے وہاں صرف وہی روشنی نظر آتی جسے ہماری فضا منتشر یا نئے راستے پر پھیلا دیتی ہے۔ نیلی روشنی کی فریکونسی چونکہ سُرخ روشنی سے زیادہ ہوتی ہے لہٰذا آسمان نیلاBlue Sky نظر آتا ہے۔ سلیٹی یا وائلٹ (Violet) رنگ کی روشنی اگرچہ نیلے رنگ کی روشنی کی نسبت زیادہ قوت سے منتشر ہوتی ہے لیکن اِس کے باوجود فضا میں داخل ہونے والی روشنیLight وائلٹ کی بجائے نیلی ہوتی ہے۔ اِس کی وجہ یہ ہے کہ ہماری آنکھ وائلٹ روشنی کی بجائےinstead نیلی روشنی کو زیادہ آسانی سے دیکھ سکتی ہے۔ لہٰذا آسمان نیلا ہی نظر آتا ہے۔
 
جب ہم اُفق پر سورج کو غروب ہوتے ہوئے دیکھتے ہیں تو دراصلActually اِس عمل کے مخالف عمل وقوع پذیر ہوتا ہے۔ ہم اُس وقت صرف وہ روشنی دیکھ پاتے ہیں جو اطراف میں منتشرDispersed نہ ہوئی ہو۔ چونکہ سورج کی روشنی کی طیف کا سُرخ حصہ فضا میں منتشرDispersed ہوئے بغیر ہماری بصارتVisualization تک پہنچ جاتا ہے لہٰذا یہ بہتر طور پر نظر آتا ہے۔ فضا میں سورج کی روشنی جتنا لمبا فاصلہDistance طے کر ے گی یہ عمل اُتنا ہی بہتر طور پر ہو گا۔ یہاں پر نیلی روشنی زیادہ بہتر طور پر منتشر Dispersedہو گی یہی وجہ ہے کہ ڈوبتا ہوا سورج سُرخی مائل نظر آتا ہے۔ آسمان پر ماحول کی آلودگیEnvironment pollution، سلفیٹ کے چھوٹے نمدار، بخارات، نامیاتی کاربن اور معدنی گرد وغیرہ نیلی روشنی کے انتشار کو مزید تقویتStrengthدیتے ہیں اور سُرخ روشنی کے زیرِ اثر سُرخ نظر آ کر بعض اوقات غروبِ آفتاب کو قابلِ دید بنا دیتے ہیں۔

دراصل سورج جب غروب ہو رہا ہوتا ہے تو ہم تک پہنچنے والی روشنیLight کو نصف النہار کے برعکس ہم تک پہنچنے کیلئے زیادہ طویل راستہLong Distance اختیار کرنا پڑتا ہے لہٰذا روشنی کے طیف میں واحد رنگ جو سب سے کم منشرDispersed ہوتا ہے یعنی سْرخ رنگ وہ ہمیں نظر آ تا ہے۔

دوسری طرف بادل جو پانی کے بخارات پر مشتملContains ہوتے ہیں قابل بصارت روشنی کے طول موج سے بڑے ہوتے ہیں۔ سورج کی جس روشنی کو یہ منتشر Dispersedکرتے ہیں اْس کا انحصار اس بات پر ہوتا ہے کہ سورج کی روشنی کیسے منعطف ہوئی،کیسے اْس کا اندرونی انعکاسInternal reflection ہوا اور وہ بخارات کے گرد کیسے منتشر ہوئی، ان ذرات میں نیلی اور سْرخ روشنی کا انتشار گیسی مالیکیولوں کی طرح زیادہ نہیں ہوتا۔ہماری آنکھیں چونکہ جزوی طور پر منتشرDispersed روشنی کی تمام طول امواج کو موصولReceived کر رہی ہوتی ہیں۔ لٰہذا ہمیں بادل نیلے کی بجائے زیادہ تر سفید نظر آتے ہیں۔ خاص طور پر جب پس منظر میں نیلا آسمانBlue Sky ہو تو اْس وقت یہ زیادہ سفید نظر آتے ہیں۔آسمان کا نیلا نظر آنا چونکہ روشنی کے انتشارAnarchy کی وجہ سے ہوتا ہے جس کی وجہ سے ہماری فضا ہے۔ لٰہذا کسی ایسے سیارے پر جہاں فضاSpace موجود نہ ہو آسمان روشن یا نیلا نظر نہیں آئے گا۔ مثلا چاند پر اْترنے والے اپالومشن کے خلائی جہاز Spacecraftمیں موجود خلا بازوں کی چاند کی سطح پر اْتاری گئی تصاویر میں اس بات کی وضاحت Explanationنظر آتی تھی کہ چاند کی سطح تو دھوپ نہائی ہوئی تھی لیکن سورج سے دور آسمان سیاہ نظر آرہاتھا۔


Loading...
آسمان نیلا کیوں ہے؟ آسمان نیلا کیوں ہے؟ Reviewed by Mirza Ehtsham on March 23, 2019 Rating: 5

No comments:

Facebook

Powered by Blogger.